پولیس نے لال مسجد کو گھیرے میں لے لیا، رینجرز الرٹ

https://newskisite.com
اسلام آباد وفاقی پولیس نے لال مسجد اور جامعہ حفظہ کو اپنے حصار میں لے لیا اور آخری اطلاعات تک لال مسجد میں کانفرنس کے انعقاد اور سابق خطیب مولاناعبدالعزیز کو خطاب کی اجازت نہیں دی گئی جبکہ لال مسجد آنے جانے والے تمام راستے سیل کرکے بھاری نفری تعینات کردی گئی۔
نجی ٹی وی چینل کے مطابق لال مسجد انتظامیہ نے نمازجمعہ کے بعد تحفظ ناموس رسالت ﷺ کانفرنس کے انعقاد کا اعلان کیاتھا جس میں کئی دیگر علمائے کرام کے علاوہ لال مسجد کے سابق خطیب مولاناعبدالعزیز کوبھی خطاب کرنا تھا لیکن اُن پر لال مسجد جانے پر پابندی ہے ، ضلعی انتظامیہ نے بھی کانفرنس کے انعقاد کی اجازت نہیں دی، دوسری طرف لال مسجد انتظامیہ نے موقف اپنایاکہ اُنہیں کسی سے اجازت لینے کی ضرورت نہیں ، وہ چاردیواری کے اندر کانفرنس کا انعقاد کریں گے ، مولاناعبدالعزیز پر عائد پابندی پر عمل درآمد یقینی بنانے کے لیے وفاقی پولیس نے لال مسجد کو گھیرے میں لے لیا اور جامعہ حفظہ کے باہر موجود رینجرز کوبھی الرٹ کردیاگیا۔
https://newskisite.com
بتایاگیاہے کہ نمازجمعہ سے قبل آئی جی اسلام آباد طارق مسعود یاسین نے جی سکس کا دورہ کیا اوراہلکاروں کو ہدایت کی کہ امن وامان کی صورتحال کو ہرممکن بحال رکھیں گے، کسی بھی شخص کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔
آخری اطلاعات تک کسی بھی قسم کا کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں