دبئی میں 2 پاکستانی نوجوان اور ایک فرانسیسی بوڑھا، تینوں ایک ساتھ ایسا شرمناک ترین کام کرتے پکڑے گئے کہ جان کر ہر پاکستانی کا چہرہ شرم سے لال ہوجائے

http://newskisite.com

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) بیرون ملک مقیم پاکستانیوں میں سے کچھ بعض اوقات جرائم کا ارتکاب بھی کر بیٹھتے ہیں لیکن دبئی میں کام کرنے والے دو پاکستانی نوجوان ایک ایسا جرم کرتے پکڑے گئے ہیں کہ جس کے بارے میں جان کر آپ کو افسوس بھی ہوگا اور حیرت بھی۔
گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق ایک 23 سالہ پاکستانی نوجوان اور اس کے 28 سالہ ساتھی کو ایک فرانسیسی بوڑھے کی عصمت دری کرنے کے جرم میں گرفتار کرلیاگیا ہے۔ پاکستانی نوجوانوں کے ہاتھوں مبینہ عصمت دری کا نشانہ بننے والے شخص کی جانب سے پولیس کو شکایت کی گئی تھی کہ ملزمان نے اس کے فلیٹ میں گھس کر اس کے ہاتھ پاﺅں باندھے اور باری باری زیادتی کا نشانہ بنایا جس کے بعد وہ نقدی اور قیمتی اشیاءلوٹ کر فرار ہوگئے۔
پولیس نے تحقیق کا آغاز کیا تو ایسے حیران کن اور شرمناک حقائق سامنے آئے کہ ہر کوئی سن کر ہکا بکا رہ گیا۔ رپورٹ کے مطابق ہوا بازی کے شعبے سے منسلک فرانسیسی شخص 23 سالہ پاکستانی نوجوان سے کئی ماہ سے رابطے میں تھا۔ وہ اسے اپنے فلیٹ پر بلاتا تھا اور نہ صرف بخوشی اپنے ساتھ بدفعلی کرواتا تھا بلکہ اس کے بدلے پاکستانی نوجوان کو ہر بار150 درہم کا معاوضہ بھی ادا کرتا تھا۔

رپورٹ کے مطابق فرانسیسی شہری نے اسی نیت سے پاکستانی نوجوان کو بلایا تھا لیکن اس بار وہ اپنے 28 سالہ دوست کو بھی ساتھ لے آیا۔ ملزمان کا مﺅقف ہے کہ انہوں نے فرانسیسی شہری کی رضامندی کے ساتھ اس کے ساتھ باری باری بدفعلی کی، لیکن فرانسیسی شہری کا کہنا ہے کہ حسب سابق نوجوان نے اس کے ساتھ تعلق استوار کیا لیکن جب اس کے ساتھ آنے والے دوست نے بھی خواہش کا اظہار کیا تو اس نے انکار کردیا، جس پر دونوں غضبناک ہوگئے اور اسے باندھ کر زیادتی کا نشانہ بنایا۔ اس کا مزید کہنا ہے کہ ملزمان اس کا موبائل فون، لیپ ٹاپ اور رقم وغیرہ لوٹ کر فرار ہوگئے۔
معاملے کی تفصیلات سامنے آنے پر پولیس نے نہ صرف پاکستانی نوجوانوں کو عدالت میں پیش کیا ہے بلکہ شکایت کرنے والے فرانسیسی شہری پر بھی خلاف قانون جسمانی تعلقات استوار کرنے کے جرم میں قانونی کارروائی کا آغاز کردیا ہے۔ مقدمے کی کاروائی جاری ہے اور فیصلہ 11 جون کو متوقع ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں